Poetry Kabi To Moosa Aye Ga Saeed Aslam | Punjabi Shayari Whatsapp Status 2020


سنا ہے اک زمانے میں کوئی فرعون ہوتا تھا
کہیں اس کی حکومت تھی غضب کی بربریت تھی
بڑا سفاک حاکم تھا خدائی کا دعوی کرتا تھا کوئی بھی شخص اس کے سامنے
کچھ بھی نہ کہتا تھا زمانہ اس کے سارے ظلم
چپکے چپکے سہتا تھا ہوا پھر یوں
خدا نے ایک موسٰی بھیج کر اس کو مٹا ڈالا ہمارا دور ایسا ہے
جدھر دیکھو جہاں دیکھو وہیں فرعون بیٹھا ہے کہیں ظالم وڈیرا ہے
،کہیں زردار ہےکوئی کہیں ہے کوئی مل مالک
،کہیں ہےوقت کا حاکم بُہت سے رُوپ ہیں اس کے
بہت سے رنگ ہیں اس کے نرالے ڈھنگ ہیں اس کے کسی کا بس نہیں چلتا …
…..اسے روکے اسے ٹوکے سبھی مجبور ہیں شاید…..
… سبھی مظلوم ہیں شاید سبھی رنجور ہیں شاید ..
….سبھی محکوم ہیں شاید مگر امید ہے ہم کو
کبھی تو موسی آۓگا غرور ان کا ستم ان کا
وہ مٹی میں ملاۓ گا کبھی تو موسیٰ آئے گا لائک کریں، شئیر کریں چینل کو سبکرائیب کریں اور بیل آئی کن کوضرور دبائیں۔

44 Replies to “Poetry Kabi To Moosa Aye Ga Saeed Aslam | Punjabi Shayari Whatsapp Status 2020

  1. bahi saeed so nhi but plz ak karni the plz gussa nhi karna plz bahi jn background song wo hi achy tha plz bahi

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *